انگلینڈ,نیوزی لینڈ,ویسٹ انڈیز,پاکستان,اتفاق

انگلینڈ کے بعد اب نیوزی لینڈکادورہ،مہمان پھر ویسٹ انڈیز اور پاکستان۔۔اتفاق یاانکشاف

عمران عثمانی

کورونا کے بعد کی دنیا بدل رہی ہے ،کرکٹ کی دنیا تو پہلے لمحے میں ہی بدل گئی،حالات و واقعات نے جو نیا منظر نامہ سیٹ کیا ہے،اس میں ہر آنے والے دن کے ساتھ ایک حیرت انگیز نشانی ہے،ایک سوچنے کا پہلو ہے،ایک نتیجہ پانے کی خوشی ہے اور اگلے کل کی مزید روشن نوید ہے۔
کورونا سے پہلے کیا تھا۔پاکستان ،ویسٹ انڈیز جیسے کرکٹ ممالک کارنر کر دیئے گئے تھے۔سیریز کے شیڈول سے لیکر کھیلنے کے فیصلے تک میں دوسروں کے محتاج تھے،پاکستان اگر چہ اپنی انٹر نیشنل کرکٹ اپنے ملک لے جاچکا تھا لیکن سب نے دیکھا تھا کہ اسی سال کے شروع میں بنگلہ دیش جیسے ملک نے کتنے نخرے کئے تھے اور پھر اس نے اپنی ضد منوالی اور دورہ 2حصوں میں تقسیم ہوگیا اور دوسر احصہ کورونا کی وجہ سے التوا میں پڑا ہے،ایسے میں انگلینڈ ،آسٹریلیا اور نیوزی لینڈ کی آسانی سے آمد کا سوچنا بھی محال تھاکیونکہ یہ ممالک تو ویسے ہی بہانہ تراشتے ہیں کہ کوئی موقع ملے اور پاکستان کے سفر سے بچا جاسکے۔
پھر کورونا آگیا،کرکٹ رک گئی بلکہ زندگی رک گئی۔
نیوزی لینڈ حکومت نے کرکٹ کی اجازت دے دی،پاکستان کے میچز کا شیڈول ،بریکنگ نیوز
انگلینڈ جیسے امیر کرکٹ بورڈ کے لئے بنا کھیلے یہ سال گزارنا مشکل ہوگیا،اس نے آخر کار اپنا سیزن جیسے تیسے مکمل کر ہی لیا ہے۔آسٹریلیا نے اپنا ہوم سیزن بچانے کے لئے ورلڈ ٹی 20 ملتوی کردیا اور بھارت کے دورہ آسٹریلیا کی یقین دہانی لے لی،چنانچہ ٹیم سال کے آخر میں آسٹریلیا جائے گی،اس طرح آسٹریلیا بھی اپنا نقصان دور کرنے کا پلان قریب مکمل کرچکا ہے۔نیوزی لینڈ جو کورونا سے کم متاثر ہوا ہے،پھر بھی کسی ملک کا وہاں آسانی سے کھیلنا آسان نہیں تھا،اس کی حکومت نے بھی 24گھنٹے قبل انٹرنیشنل کرکٹ کی میزبانی کی اجازت دے دی ہے۔
کمال اتفاق یہ دیکھیں کہ انگلینڈ کرکٹ کے سیزن کے لئے ویسٹ انڈیز اور پاکستان کی سیریز اتفاق سے شیڈول تھیں،دونوں ممالک گئے اور کھیل آئے،پوری دنیا میں انہیں عزت کی نگاہ سے دیکھا گیا۔
پاکستان کی 2 ٹیمیں کرائسٹ چرچ میں اتریں گی،ویسٹ انڈین کے لئے کڑی شرائط ،بریکنگ نیوز
نیوزی لینڈ کرکٹ کی بحالی ہونے جارہی ہے اور دوسرا کمال اتفاق یہ دیکھیں کہ اس کے ہاں بھی پہلے ویسٹ انڈیز اور پاکستان کی سیریز شیڈول ہیں،یہ دونوں ممالک جانے کے لئے تیار ہیں۔
اسی عرصہ میں یہ بات یاد رکھنے کی ہے کہ انگلینڈ میں بھارت اور جنوبی افریقا ویمنز ٹیم نے جانا تھا ،انہوں نے آخری لمحات میں انکار کردیا،اگر یہی ممالک انگلینڈ میں اپنی مردوں کی ٹی م کی سیریز کھیل رہے ہوتے تو کیا انکار نہ کرتے؟ضرور انکار کردیتے۔
نیوزی لینڈ کا دورہ آسٹریلیا ملتوی،پاکستان سے سیریز ہوگی،بریکنگ نیوز
آپ زیادہ دور مت جائیں،بنگلہ دیشی ٹیم نے شیڈول کے مطابق 27ستمبر کو سری لنکا روانہ ہونا ہے اور ایک دن باقی ہے لیکن تاحا ل دورہ غیر یقینی ہے۔ایسے میں ویسٹ انڈیز اور پاکستان جیسے ممالک کا ایک بار ملک سے باہر کھیل آنا اور دوسری بار جانے کی تیاری کرنا کیا معمولی بات ہے؟
ویسٹ انڈیز اور پاکستان کو انگلینڈ کے بعد نیوزی لینڈ کی کرکٹ بحالی میں اپنا کردار اداکرنے کا یہ دلچسپ اتفاق حاصل ہواہے۔دونوں ممالک انگلینڈ جیسی ترتیب سے اب نیوزی لینڈجائیں گے۔
پاکستان کو بلاشبہ یہ بڑا اعزاز حاصل ہوا ہے۔ان 2 ممالک کے دوروں کے بعد انگلینڈ اور نیوزی لینڈ کے لئے اب پاکستان کے دورے سے انکار کاکوئی راستہ نہیں ملے گا،اسی طرح آسٹریلیا ہے ،اسے بھی اب ایسا کوئی چانس نہیں ملے گا کہ وہ پاکستان میں کھیلنے نہ آئے کیونکہ اسے بھی بھارت سمیت بہت سے ممالک کو اپنے ملک لانے کے لئے بڑے پاپڑ بیلنے پڑ رہے ہیں۔
وقت بدل گیا ہے،کورونا کرکٹ کے آقائوں کی قوت بھی اب تبدیل کردے گا،آئی سی سی چیئرمین کی تاحال تقرری کا نہ ہوسکنا بھی اس کی دلیل ہے کہ طاقتور گروہ کے لئے مرضی کے فیصلے آسان نہیں رہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں