ٹائٹل,محروم,رائل چیلنجرز بنگلور,بڑے کپتان,کوہلی

آئی پی ایل ٹائٹل سے محروم رائل چیلنجرز بنگلور2 بڑے کپتان لے آئی،کوہلی کے ساتھ دوسرا کون

عمران عثمانی

آئی پی ال کی ایک اور اچھی مگر عجب ٹیم رائل چیلنجرز بنگلور ہے،اس کے پاس بڑا کپتان ہےجو ہر دلعزیز ہے اس لئے اس ٹیم کےلئے بھارتیوں کی بلا امتیاز ہمدردیاں ہیں کیونکہ اس کے قائد ان کے قومی کپتان ویرات کو ہلی ہیں لیکن ایک عرصہ سے ان کی کپتانی پر سوا ل ہیں کیونکہ وہ آئی پی ایل ٹرافی نہیں اٹھاسکے ہیں۔
راجستھان رائلز12سال سے ناکام،انگلش کھلاڑیوںپر تکیہ،اسٹیون اسمتھ کا تعویذ،چارجنگ کا سوال
رائل چیلنجرز 12 سال سے چیمپئن نہیں بن سکی،گویا کپتانی ہی مسئلہ نہیں ،پوری ٹیم کسی سایہ کے زیر اثر ہے،اس کی اب تک کی بہترین جگہ کیا تھی؟
2009 اور 2011 اور پھر 5 سال بعد 2016 میں فائنل کھیلنا اور ہارنا۔مطلب ان 3 سال میں رنر اپ پوزیشن اس کی بہترین منزل رہی ہے۔
آئی پی ایل 2019کی رنر اپ چنائی سپر کنگزکے لئےمسلسل تیسرا فائنل کیوں مشکل
گزشتہ سال تو حد ہی ہوگئی،ویرات کوہلی کی یہ ٹیم 8ویں اورآخری نمبر پر رہی۔اس سال اے بی ڈی ویلیئرز،ایرون فنچ اور ایڈم زمپا اسکے اسکواڈ میں شامل ہیں اور انگلینڈ کے معین علی بھی توجہ کا مرکز ہونگے۔گزشتہ 3 سال سے ٹیبل کی آخری 2 ٹیموں میں رہنے والی یہ سائیڈ اس سال کچھ بدل سکے گی؟لوگ ماننے کو تیار نہیں ہیں۔آسٹریلیا کے ایڈم زمپا معین علی کے ساتھ اسپن سےا ٹیک کرکے کچھ منفرد کرسکتے ہیں اور ایرون فنچ کا نیا اضافہ کوہلی کو کپتانی میں مدد دے سکتا ہے۔
آئی پی ایل، ممبئی انڈینزکے لئےاعزاز کے دفاع میں ناکامی یقینی،انگلش کرکٹر آئوٹ،کچھ انکشافات

اپنا تبصرہ بھیجیں