بنگلہ دیش کے کھلاڑیوں کا سری لنکا کے دورے سے انکار بریکنگ نیوز

رپورٹ وتجزیہ:عمران عثمانی
کرکٹ کی دنیا ویسٹ انڈیز اور پاکستان کے کھلاڑیوں کو کس طرح یاد کرے گی،اگر انہوں نے شیڈول کے مطابق انگلینڈ کا دورہ کرلیا تو دنیائے کرکٹ کے دیگر ممالک اسے کس طرح لیں گے۔ویسٹ انڈیز ٹیم اگلے 24 گھنٹے میں انگلینڈ پہنچنے والی ہے جبکہ پاکستان کرکٹ ٹیم نے قریب ایک ماہ بعد انگلینڈ کے لئے اڑان بھرنی ہے،کووڈ-19نے جہاں دیگر سرگرمیاں متاثر کی ہیں وہاں کرکٹ مقابلے بھی بری طرح لپیٹ میں آئے ہیں اس کے باوجود انگلینڈ کرکٹ بورڈ کی زبردست محنت اور ویسٹ انڈیز و پاکستان کے کردار کی عظمت دن بدن واضح ہوتی جارہی ہے اس لئے بھی کی ویسٹ انڈیز نے 8 جولائی سے پہلا ٹیسٹ کھیلنا ہے لیکن اس کا دورہ انگلینڈ 9جون سے شروع ہوجائے گا دوسری جانب حالت یہ ہے کہ بنگلہ دیش کرکٹ ٹیم کے سینئرز نے جولائی ہی میں شیڈول دورہ سری لنکا سے انکار کردیا ہے،ٹیم نے جولائی کے تیسرے ہفتہ سے 3 ٹیسٹ میچزکی سیریز کے لئے کولمبو جانا ہے۔
بنگلہ دیش کرکٹ بورڈ کے آفیشلز نے ویڈیو کانفرنس کے ذریعہ کھلاڑیوں سے مشاورت کی تو تمام سینئرز نے موقف اختیار کیا ہے کہ کورونا کے اثرات بڑھتے جارہے ہیں،ایسے میں ہم سری لنکا جاکر وائرس واپس اپنے ملک لانے کا سبب بن سکتے ہیں ،اس سے ہمارا ملک اور اس کے ساتھ ساتھ ہماری فیملیز متاثر ہوسکتی ہیں۔
بنگلہ دیش کرکٹ بورڈ کے آپریشنز چیئرمین اکرم خان نے تسلیم کیا ہے کہ میٹنگ میں کرکٹرز نے شدید تحفظات ظاہر کئے ہیں ،انہوں نے بتایا کہ کرکٹرز کسی صورت دورے کے لئے تیار نہیں ہیں ،انہوں نے واضح کیا ہے کہ سری لنکا کے دورے کےاپنے وقت پر ہونے کے امکانات نہ ہونے کے برابر ہیں۔
سری لنکا کرکٹ بورڈ اسے ستمبر میں کرنے کی کوشش بھی کر رہا ہے لیکن بنگلہ دیش بورڈ کے پاس جواب دینے کو کچھ نہیں ہے۔
سری لنکا کے کھلاڑی اگرچہ کولمبو میں ٹریننگ شروع کرچکے ہیں لیکن بنگلہ دیش کرکٹ بورڈ نے اپنے کھلاڑیوں کو ڈھاکا میں ٹریننگ سے روک دیا ہے جو گزشتہ ہفتہ اس کی کوشش کر رہے تھے۔
بنگلہ دیش بورڈ کے آفیشل کا کہنا تھا کہ ہم دورے کی بات ابھی نہیں کرسکتے،گائیڈ لائنز کے مطابق اس سے قبل 40 روزہ ٹریننگ ضروری ہے اور اس کا ابھی کوئی شیڈول نہیں ہے ،ممکن ہے کہ پلیئرز کو انفرادی اجازت دیدی جائے لیکن گروپ کی شکل میں ابھی کوئی فیصلہ نہیں ہوا ہے۔
یاد رہے کہ اس سے قبل بھارت نے سری لنکا کے دورے سے عدم دلچسی ظاہر کی ہے،بنگلہ دیش کی سیریز سے قبل بھارت نے وہاں 3 ون ڈے اور 3ٹی 20 میچز کھیلنے ہیں۔
بھارت اور بنگلہ دیش ہمسایہ ملک سری لنکا کے دورے کے لئے تیار نہیں ہیں،ویسٹ انڈیز ٹیم دورہ شروع کرنے والی ہے اور پاکستان اس کے پیچھے تیار ہے،کرکٹ کی تاریخ اور کرکٹ کے جفادری ممالک ویسٹ انڈیز اور پاکستان (اگر دورے شیڈول کے مطابق ہوگئے )کے فیصلے کو کیا ٹائٹل دیں گے اور اس کے مقابلے میں بنگلہ دیش اور بھارت کے لئے کون سا ٹائٹل موزوں رہے گا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں