سری لنکن کرکٹ بورڈ کا بنگلہ دیش پر جھوٹے دعوے کا الزام،محکمہ صحت سے آج اہم میٹنگ

عمران عثمانی

بنگلہ دیش کرکٹ بورڈ کے سخت اعلان کے بعد سری لنکن کرکٹ حکام کے اہم ترین اجلاس میں ملکی محکمہ صحت سےرابطہ کرنے پر اتفاق ہوگیا ہے،بورڈ کی ٹیم ٹاقسک فورس سے بدھ 16 ستمبر کو ملاقات کرکے کچھ نئی تجاویز دے گی اور پھر بنگلہ دیشی بورڈ کو نئی سفارشات بھیج جائیں گی لیکن اس سے قبل سری لنکا اور بنگلہ دیش کی آنے والی ٹیسٹ سیریز پر غیر یقینی کے بادل مزید گہرے ہوگئے ہیں کیونکہ سری لنکن کرکٹ آفیشل نے رد عمل میں بنگلہ دیشی بورڈ کے سربراہ پر غلط بیانی کے الزامات عائد کردیئے ہیں۔
بنگلہ دیش کی دھمکی کام دکھا گئی،سری لنکن بورڈ کا رابطہ،قرنطینہ وقت میں کمی
سری لنکا کرکٹ کے چیئرمین شمی سلوا نے سیلون ٹوڈے کو بتایا ہے کہ ایسی کوئی بات نہیں ہے اور بی سی بی نے جھوٹا دعویٰ کیا ہے کہ ہم نے بی سی بی سے سات دن کے وقفے سے متعلق مدت کے قرنطینہ کی بات کی تھی۔یہ محکمہ صحت کی ہدایات ہیں کہ 14 روزہ قرنطینہ کیا جائے،بورڈ اس سلسلہ میں کوئی تبدیلی نہیں کرسکتا البتہ حکومت سری لنکا خود کوئی تبدیلی کردے تو الگ بات ہوگی۔
ایک دن قبل بنگلہ دیشی بورڈ کے سربراہ نظام الدین نےاعلان کیا تھا کہ ہمیں دورے سے قبل 14روزہ قرنطینہ کہا کہا جارہا ہے ،ہمیں یہ شرط منظور نہیں ہوگی،اگر 7دن کا کہا جائے تو ٹھیک ہے اور ہمیں سری لنکن بورڈ 7دن کی تجویز پہلے دے چکا ہے۔
سری لنکا بورڈ نے ایسی کسی تجویز سے انکار کردیا ہے اور ملکی وزیر کھیل کے اس مشورے کو بھی ماننے سے انکار کردیا ہے جس میں انہو ں نے کہا تھا کہ محکمہ صحت سے بورڈ بات کرکے نرمی لانے کی کوشش کرے۔
چیئرمین نے یہ بات واضح کردی ہےکہ وہ اپنے محکمہ صحت
حکام کے ساتھ قواعد و ضوابط پر کوئی بات چیت کرنے کے موڈ میں نہیں ہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں