پاکستان کا انگلش سرزمین پر مسلسل 5واں سال،کیا ہوتا رہا

عمران عثمانی

پاکستان کرکٹ ٹیم اس اعتبار سے خوش قسمت ہے کہ وہ مسلسل 5ویں سال انگلینڈ کی سر زمین پر موجود ہے.اوپر تلے ان دوروں کا آغاز 2016 سے ہوا اور 2020میں یہ اس کا سال کی مناسبت سے 5واں دورہ ہے.
پاکستانی ٹیم نے 4 سال قبل 2016میں مصباح کی قیادت میں انگلینڈ کا دورہ کیا اور تینوں فارمیٹ کھیلے،ایک ڈرا رہا،ایک میں انگلینڈ اور ایک میں پاکستان فتحیاب ہوا.4 ٹیسٹ میچزکی سیریز 2-2 سے ڈرا رہی.یہ وہی سیریز تھی جس میں مصباح نے 42 سال کی عمر میں لارڈز کے تاریخی مقام پر سنچری بناکر پش اپس کئے تھے جبکہ یاسر شاہ نے 10 وکٹیں اڑائی تھیں.پاکستان نے 76رنزکی کامیابی کے ساتھ دورے کا آغاز کیا تھا ،پھر اوول کا ٹیسٹ جیت کر کم بیک کرکے سیریز برابر کردی تھی.5ایک روزہ میچزکی سیریز انگلینڈ نے 1-4 سے جیتی تھی تو پاکستان نے واحد ٹی 20 اپنے نام کرلیا تھا.
2017میں ٹیم نے سرفراز احمد کی قیادت میں انگلینڈ کا دورہ کیا تو چیمپئنز ٹرافی کا ٹائٹل اس کا منتظر تھا،فائنل میں بھارت کو شکست فاش دی تھی.
2018میں انگلینڈ کے دورے میں 2 ٹیسٹ میچز کی سیریز 1-1سے پھر ڈرا کھیلی تھی.
2019میں انگلینڈ کے خلاف پاکستان 5 ایک روزہ میچز کی سیریز بری طرح0-4سے ہارا اور واحد ٹی میچ بھی نہیں جیت سکا تھا.اس کے بعد ورلڈ کپ میں بھی اس کی پوزیشن 5ویں رہی تھی.
2020میں یہ مسلسل 5واں دورہ اور تیسری ٹیسٹ سیریز ہے،پاکستان 2016سے ناقابل شکست ہے تو انگلینڈ اپنی جگہ ناقابل تسخیر،اس بار بھی بنیادی دورہ ورلڈ ٹیسٹ چیمپئن شپ کے 3میچز کی ٹیسٹ سیریز کا ہے،سابقہ ریکارڈ کے مطابق مقابلہ ٹکر کا رہے گا.

اپنا تبصرہ بھیجیں