کرکٹ جنوبی افریقا,آئی سی سی,سابق قانونی سربراہ

کرکٹ جنوبی افریقا کی معطلی،آئی سی سی کے سابق قانونی سربراہ کا رد عمل آگیا

جوہانسبرگ(کرک سین رپورٹ)

انٹر نیشنل کرکٹ کونسل نے کرکٹ جنوبی افریقا سے وضاحت طلب کرنے کا فیصلہ کر لیا،امکان ہے کہ آئی سی سی بورڈ سے یہ وضاحت اگلے چند گھنٹوں میں مانگے گی ۔ اس بات کا انکشاف آئی سی سی کے سابق قانونی سربراہ ڈیوڈ بیکر نے کیا ہے جو باڈی میں حکومتی یا بیرونی مداخلت سے متعلق قانون بنانے کے مسودے میں شامل تھے۔
آئی سی سی کے آئین کے آرٹیکل 2.4 میں درج ہے کہ ممبر خود مختار ہو اور اس بات کو یقینی بنائے کہ حکومت سمیت کوئی بھی ادارہ کرکٹ باڈی میں مداخلت مت کرے۔
کرکٹ جنوبی افریقا کی معطلی،بورڈ کا پہلاسنسنی خیز رد عمل،کرک سین پر،بریکنگ نیوز
آئی سی سی قانون کے یہ زیادہ خلاف اس لئے نہیں ہے کہ جنوبی افریقا میں سپورٹس اور اولمپک فیڈریشن نے جو سنبھالا ہے وہ سیاسی نہیں عوامی ادارہ ہے۔
کرکٹ جنوبی افریقا معطل،حکومت کا کنٹرول،آئی سی سی کی جانب سے پابندی یقینی،بریکنگ نیوز
بیکر اس وقت جنوبی افریقہ میں کھیلوں کے وکیل کے طور پر کام کرتے ہیں انہوں نے پیش گوئی کی ہے کہ آئی سی سی اس تازہ ترین صورتحال میں محتاط رہے گی لیکن بہر حال کرکٹ جنوبی افریقا کے انتظامی اور مالی معاملات کی تحقیقات کے لئے ٹاسک ٹیم کا قیام آئین کی خلاف ورزی ہے۔
بیکر کے مطابق آئی سی سی کو قانون کے مطابق معاملہ پر تشویش لاحق ہوگی ،آئی سی سی کرکٹ بورڈ میں مداخلت او رمعطلی کی بات پر ایکشن لے گی لیکن پہلے وہ وضاحت طلب کریں گے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں