گریٹ فائٹر جاوید میاں داد کا دن

عمران عثمانی

پاکستان کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان،اسٹریٹ فائٹر جاوید میاں داد کا دن ہے۔ریکارڈ 6ورلڈ کپ کھیلنے والے جاوید میاں داد 12جون 1957کوکراچی میں پیدا ہوئے۔
وہ دنیا کے ان 2 بیٹسمینوں میں سے ایک ہیں جن کی ٹیسٹ ایوریج کبھی بھی 50 سے نیچے نہیں آئی۔پہلی ٹیسٹ اننگ میں سنچری اور چوتھی ٹیسٹ اننگ میں ڈبل سنچری بنانے والے جاوید میاں کا ریکارڈ پورے کیریئر میں اعلیٰ رہا۔
1983 -84کے سیزن میں آسٹریلیا کے ڈینس للی کو بیٹ مارنے اور 1992ورلڈ کپ میں کرن شرما کی باربار اپیل پر ان کی نقل میں جمپ مارنا جیسے واقعات ان کی الگ سے پہچان رہے۔
1986 میں شارجہ میں بھارت کے خلاف یاد گار چھکے نے انہیں آسمان کی بلندیوں پر ایسا پہنچایا کہاب بھی اس کی یاد جشن کے انداز میں منائی جاتی ہے۔
ریکارڈ 6ورلڈ کپ کھیلنے والے میاں داد 1992ورلڈ کپ کی فتح میں پاکستان کے اہم رکن تھے۔
آج 63ویں سالگرہ منانے والے جاوید میاں پاکستان کرکٹ کے لئے اتنے ہی متفکر رہتے ہیں جتنے وہ کھیلتے ہوئے ہوا کرتے تھے،ان کی فائٹنگ،ملک سے محبت اور جیتنے کا جذبہ خاص پہچان تھا ۔124ٹیسٹ میچزمیں انہوں 52 سے زائد کی اوسط سے8832رنزبنائے ہیں 233ایک روزہ میچزمیں 7381رنز انکے باکمال ہونے کا بڑا ثبوت ہیں۔
جاوید میاں داد نے جس دور میں بیٹنگ کی،وہ فاسٹ بائولرز،کوالٹی گیند بازوں اور بائونسرز کا زمانہ تھا،نیوٹرل امپائرز کی جگہ مقامی امپائرزکھڑے ہونے کا وقت تھا،آج کی کرکٹ میں وہ ہوتے تو شاید 20 ہزار ٹیسٹ رنز کے مالک ہوتے۔
پاکستان کرکٹ کو ان کی شاندا خدمات پر فخر ہے،کرک سین بھی جاوید میاں داد کو سالگرہ پر مبارکباد پیش کرتا ہے اور ان کی عمر و صحت کے لئے دعا گو ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں