“گھبرانا نہیں ہے”،میانداد بابر اعظم کو نصیحت کرتے خود گھبرا گئے، ،بریکنگ نیوز

عمران عثمانی
لیں جی اب کرکٹ ٹیم کے کپتان کو بھی نصیحت کی گئی ہے کہ
گھبرانا نہیں ہے.
اور یہ نصیحت کرنے والے سابق کپتان جاوید میاں داد ہیں جو عمران خان کی کپتانی میں ان کے نائب ہوا کرتے تھے.
جیسا کہ پاکستانی وزیر اعظم عمران خان اپنی قوم کو کہتے ہوتے ہیں کہ گھبرانا نہیں ہیں ایسے ہی کرکٹ کے زمانے کے ان کے نائب جاوید میاں داد نے بھی بابر اعظم کو یہ جملہ کہا ہے کہ
آپ نے دورہ انگلینڈ میں گھبرانا نہیں ہے.
اپنے یو ٹیوب چینل پر جاوید میاں داد
بابر اعظم کو 6 منٹ کی نصیحت کرتے ایک اہم ترین بات یا تو بھول گئے
اور یا پھر کہتے کہتے خود سے گھبرا گئے .
ماجرا یہ ہے کہ جاوید میاں داد نےبا براعظم کے ایک پرانے واقعہ کو بنیاد بنا کر بات کی جس میں ان کی انگلش کے حوالے سے کچھ تکرار ہوئی تھی.
سابق کرکٹرز کے کہنے پر بابر محسوس کرگئے تھے اور کچھ آئوٹ آف دا وے جا کر انگریز نہ ہونے کی بات کردی تھی.
جاوید میاں داد بابر اعظم کو تسلی دے رہے تھے اور ان کے حق میں بول رہے تھے کہ انگلش نہیں آتی تو کوئی مسئلہ نہیں ہے. بڑوں بڑوں کو بولنا نہیں آتا لیکن اس کا یہ مطلب نہیں کہ آپ کام کے نہیں ہیں بلکہ آپ کا کام کرکٹ کھیلنا ہے آپ اس پر فوکس رکھیں. آپ کو ایسی باتیں کرنے والے کالے گورے ہیں. ساری زندگی انگریز کے نیچے ہی لگے رہتے ہیں.
جاوید میاں داد نے بابر اعظم کو مشورہ دیا کہ انگلینڈ میں فرنٹ سے لیڈ کریں اور آگے ہوکر اعتماد سے کپتانی کریں اور جیت کر آئیں. جاوید میاں داد نے اس موقع پر بابر کو چالاکی دکھانے،تیزی اور عقل مندی دکھانے کے بھی مشورے دیئے اور اپنی مثال بھی دی. پاکستان ٹیم سے کہا کہ اب وکٹیں اچھی بن رہی ہیں. کوئی مسئلہ نہیں ہوگا.
جاوید میاں داد نے اچھی کپتانی کرنے،فرنٹ سے لیڈ کرنے اور قیادت میں چالاکی دکھانے کی ساری باتیں تو بابر اعظم سے کیں.
اور یہ بھی ان سے ہی کہا کہ آپ نے گھبرانا نہیں ہے.
دلچسپ بات تو یہ ہے کہ بابر اعظم تو ون ڈے اور ٹی 20 کپتان ہیں .
انگلینڈ میں ون ڈے سیریز تو ہے ہی نہیں ہے.
ٹی 20 سیریز کے 3 میچ دورے کے آخر میں 4 دن کے اندر اندر ہونے ہیں.
سب جانتے ہیں کہ انگلینڈ کے دورے میں اصل اہمیت تو ٹیسٹ سیریز کی ہوتی ہے اور پاکستان نے جاتے ہی 3 میچز کی بڑی سیریز کھیلنی ہے
اور ٹیسٹ ٹیم کے کپتان تو اظہر علی ہیں.
جاوید میاں داد بھول گئے کہ بابر ٹیسٹ ٹیم کے کپتان نہیں ہیں اور یا پھر خود گھبراہٹ میں کچھ غلط بول گئے؟
فیصلہ آپ کرلیں.

اپنا تبصرہ بھیجیں